fbpx
خبریں

مریض کی آنکھ سے 2 موتی نکال لیے، پیر حق خطیب کا ایک اور پردہ فاش

اے آر وائی نیوز کے پروگرام سرعام کے میزبان اور تحقیقاتی صحافی اقرار الحسن نے جعلی پیر حق خطیب کی شعبدہ بازیوں اور چالاکیوں کا پردہ چاک کرنے کا سلسلہ جاری رکھا ہوا ہے۔

سرعام کے تیسرے پروگرام میں بھی انہوں نے شعبدہ بازی کے ذریعے سادہ لوح عوام کو گمراہ کرنے اور انہیں لوٹنے والے پیر حق خطیب کی ویڈیو میں دکھائے جانے والے کرتبوں کی حقیقت بے نقاب کردی۔

انہوں نے پیر حق خطیب کی طرح ایک مرد اور خاتون (بظاہر مریض) کی آنکھوں سے سونے کی چین نکال کر دکھائی جبکہ ایک اور شخص کی آنکھ سے دو موتی سب کے سامنے نکال کر دکھائے۔

ان کا کہنا تھا کہ اگر آنکھ سے موتی نکالنا کسی کے پیر ہونے کی دلیل ہے تو میں نے بھی ایک شخص کی آنکھ سے ایک کے بجائے دو موتی نکال کر دکھائے ہیں۔

اقرار الحسن نے کہا کہ میری یہ مہم اس سچ کو سامنے لانے کیلئے ہے جسے پیر حق خطیب اپنے جھوٹ کے ذریعے پھیلا کر لوگوں کو گمراہ کر رہا ہے۔

انہوں نے بتایا کہ پروگرام کی ریکارڈنگ کے دوران ایسے بہت سے لوگ ملے جنہوں نے بتایا کہ اس جعلی پیر نے ہمارے مریض کا علاج رکوا دیا اور وہ تکالیف سہتے سہتے اس دنیا سے رخصت ہوگئے۔

انہوں نے پیر حق خطیب عرف شف شف والی سرکارکو کھلا چیلنج دیتے ہوئے کہا کہ وہ جہاں اور جب چاہیں کسی بھی کیمرے کے سامنے ہمارے اس کرتب کو جھٹکلا کر دکھائیں۔

Comments




Source link

Facebook Comments

رائے دیں

Back to top button