fbpx
خبریں

عمر میں اضافے اور بہترین صحت کے لیے یہ 5 کام کریں

ماہرین صحت نے آپ کی عمر میں اضافے اور صحت مند زندگی گزارنے سے متعلق اپنے قیمتی مشورے سے آگاہ کرتے ہوئے یہ پانچ کام کرنے کی ہدایت دی ہے۔

اگرچہ موت انسانی زندگی کی ایک ناگزیر حقیقت ہے لیکن زندگی کو حتی الامکان طویل کرنے کے طبی طریقے بھی موجود ہیں۔

ماہر صحت نے مطالعات کے بعد یہ نتیجہ اخذ کیا ہے کہ ہماری لمبی عمر کا تخمینہ 25فیصد ہمارے جینز کے ذریعہ طے کیا جاتا ہے پھر بھی اس بات کا تعین ضروری ہے کہ ہماری روز مرہ کی کیا سرگرمیاں ہیں؟

اس حوالے سے ’بور پانڈا‘ کی ایک رپورٹ میں پانچ باتوں کا احاطہ کیا گیا ہے جو آپ اپنی عمر بڑھانے اور اپنی صحت کو بہتر بنانے کے لیے استعمال کرسکتے ہیں۔

اس حوالے سے ڈیکن یونیورسٹی حسن ویلی کے ایسوسی ایٹ ایپیڈیمولوجی پروفیسر نے کچھ مشورے بیان کیے ہیں۔ مندرجہ ذیل مشوروں پر عمل کرکے آپ ایک کامیاب اور صحت مند زندگی گزار سکتے ہیں۔

1 : پودوں پر مبنی خوراک کھائیں

پودوں

مطالعے میں شواہد ظاہر کرتے ہیں کہ زیادہ تر پودوں پر مبنی غذائیں یعنی سبزیاں اور پھل کھانے کا تعلق صحت اور لمبی عمر سے ہے، جس میں عام طور پر زیادہ مقدار میں فائبر موجود ہوتا ہے، جس میں سبزیاں، پھل، اناج، پھلیاں، گری دار میوے اور بیج شامل ہیں۔

اگر آپ ا]پنی غذا میں ہرے پتوں کی سبزیاں یا پھل استعمال کرتے ہیں اور گوشت، پروسیسڈ فوڈز، چینی اور نمک کم کھاتے ہیں تو یقینی طور پر کئی بیماریوں کا خطرہ کم ہو جاتا ہے، جس میں دل کی بیماری اور کینسر بھی شامل ہیں۔

پودوں پر مبنی غذائیں غذائی اجزاء، فائٹو کیمیکلز، اینٹی آکسیڈینٹس اور فائبر سے بھرپور ہوتی ہیں، یہ سب کچھ ہماری عمر کے ساتھ ساتھ ہمارے خلیات کو پہنچنے والے نقصان سے بچاتی ہیں جو بیماری کو روکنے میں مدد کرتے ہیں۔

2 : وزن کو برقرار رکھنے کی ہر ممکن کوشش کریں

 وزن

ہیلتھ لائن کے مطابق موٹاپا صحت کے کئی مسائل کا خطرہ بڑھاتا ہے جو ہماری زندگی کو مختصر کر دیتے ہیں۔ موٹاپا، جسے جسم کی ضرورت سے زیادہ چربی کا عارضہ سمجھا جاتا ہے، ہمارے جسم کے تمام نظاموں پر دباؤ ڈالتا ہے اور اس کے متعدد جسمانی اثرات ہوتے ہیں جن میں سوزش اور ہارمون کی خرابی شامل ہے۔

صحت کے یہ مسائل آپ کے متعدد امراض کے امکانات کو بڑھاتے ہیں، جن میں دل کی بیماری، فالج، ہائی بلڈ پریشر، ذیابیطس اور متعدد کینسر شامل ہیں۔

3 : جسمانی سرگرمیوں پر زیادہ انحصار کریں

 ورزش

یاد رکھیں کہ باقاعدگی سے ورزش کرنا دائمی بیماریوں سے بچاتا ہے، ذہنی تناؤ کو کم اور دماغی صحت کو بہتر بناتا ہے۔ اس طرح کی جسمانی سرگرمی کرنے کا طریقہ آپ کے وزن کو کنٹرول کرنے اور جسم میں چربی کی سطح کو کم کرنے میں مدد فراہم کرتا ہے۔

مطالعات سے پتہ چلتا ہے کہ دن بھر کی جانے والی جسمانی سرگرمیوں سے صحت پر اچھے اثرات مرتب ہوتے ہیں۔

ورلڈ ہیلتھ آرگنائزیشن نے تمام بالغ افراد کے لیے ہفتہ میں کم از کم 150 سے 300 منٹ اور بچوں کیلئے 60 منٹ کی کی جسمانی ورزش کی سفارش کی ہے۔

میڈیکل نیوز ٹوڈے کے مطابق عمومی تندرستی کے لیے زیادہ تر بالغوں کو روزانہ 10ہزار قدم چلنے کا ہدف رکھنا چاہیے۔

4 : تمباکو نوشی سے مکمل پرہیز کریں

سگریٹ

ماہرین کے مطابق سگریٹ نوشی کرنا جسم کے تقریباً ہر عضو کو متاثر کرتا ہے اور اس کا تعلق زندگی میں کمی سے ہوتا ہے۔ تمباکو نوشی کی کوئی محفوظ سطح نہیں ہے، سگریٹ کا ہر کش آپ کو کینسر، دل کی بیماری اور ذیابیطس کے قریب لے جاتا ہے۔

5 : سماجی زندگی کو بہتر بنانا

 سماجی زندگی

سائنس الرٹ کے مطابق جب ہم صحت مند اور طویل زندگی گزارنے کی بات کرتے ہیں تو ہم اس بات پر توجہ مرکوز کرتے ہیں کہ ہم اپنے جسم کے ساتھ کیا کرتے ہیں، لیکن
جو لوگ اکیلے اور سماجی طور پر الگ تھلگ رہتے ہیں ان کے جلد مرنے کا خطرہ بہت زیادہ ہوتا ہے اور ان میں دل کی بیماری، فالج، ڈیمنشیا کے ساتھ ساتھ بے چینی اور ڈپریشن کا بھی زیادہ امکان ہوتا ہے۔

جو لوگ زیادہ سماجی طور پر جڑے ہوئے ہیں ان کے صحت مند رویوں میں مشغول ہونے کا امکان زیادہ ہوتا ہے لیکن ایسا لگتا ہے کہ تنہائی کا زیادہ اور براہ راست اثر جسمانی طور پر ہوتا ہے۔

لہٰذا اگر آپ صحت مند رہنا چاہتے ہیں اور طویل عرصے تک زندہ رہنا چاہتے ہیں، تو دوسروں سے اپنے روابط بنائیں اور اسے برقرار رکھیں۔

اور اگر آپ دوسرے لوگوں سے بات کرنے کے خواہشمند نہیں ہیں تو ایک کتا پال لیں۔ دی ہیلتھی کے مطابق اعداد و شمار بتاتے ہیں کہ کتے پالنے والے لوگ زیادہ دیر تک زندہ رہتے ہیں۔

Comments




Source link

Facebook Comments

رائے دیں

Back to top button