fbpx
خبریں

جب مجھے پہلی بار مسترد کیا گیا تو ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ !! مہر بانو نے راز کی بات بتا دی

کسی بھی فنکار کو اپنے فنی کیریئر کے آغاز میں بے شمار مشکلات مصائب اور پریشانیوں کا سامنا کرنا پڑتا ہے، جن سے گزرنے کے بعد ہی وہ عوام میں اپنی شناخت بنانے کے قابل ہوتا ہے۔

شوبز کی دنیا میں کچھ لوگ تو اپنے بڑوں کا نام استعمال کرکے اس شعبے میں قدم جمالیتے ہیں لیکن ایسے لوگوں کی تعداد بھی ان گنت ہے جنہوں نے اپنی انتھک محنت لگن اور مستقل مزاجی سے کام کرتے ہوئے خود کو منوایا۔

کچھ ایسا ہی اداکارہ مہربانو کے ساتھ ہوا جنہوں نے اپنے کیریئر کے آغاز میں پہلے آڈیشن میں ہی ناکامی کا منہ دیکھا اور جذبات قابو نہ پاتے ہوئے روپڑیں لیکن انہوں نے ہمت نہیں ہاری۔

اے آر وائی ڈیجیٹل کے پروگرام گڈ مارننگ پاکستان میں نئی آنے والی فلم ’’ٹکسالی گیٹ‘‘ کے مرکزی اداکاروں نے شرکت کی جن میں عائشہ عمر، مہر بانو ، عمر عالم شامل تھے۔

پروگرام کی میزبان ندا یاسر کی جانب سے پوچھے گئے ایک سوال کہ کیریئر میں پہلی بار مسترد کیے جانے پر آپ کا کیا ردعمل تھا؟ کے جواب میں اداکارہ مہر بانو  نے راز کی بات بیان کردی۔

انہوں نے بتایا کہ مجھے ایک تھیٹر کیلئے منتخب کرلیا گیا تھا اور وہ گروپ لندن جارہا تھا چھ مہینے کی ریہرسل کے دوران پروڈیوسر نے کسی وجہ سے مجھے منع کردیا جو مجھ سے برداشت نہیں ہوسکا اور میں ریہرسل کے دوران ہی پھوٹ پھوٹ کر رونے لگی۔

Comments




Source link

Facebook Comments

رائے دیں

Back to top button