fbpx
خبریں

این اے 8 باجوڑ میں آزاد امیدوار ریحان زیب کا قتل، حقائق سامنے آگئے

باجوڑ میں قومی اسمبلی کے حلقہ این اے 8 سے الیکشن میں حصہ لینے والے آزاد امیدوار ریحان زیب کے قتل سے متعلق حقائق سامنے آگئے۔

ریحان زیب کو قومی اور صوبائی اسمبلی کیلیے پاکستان تحریک انصاف نے ٹکٹ نہیں دیا تھا۔ پی ٹی آئی نے این اے 8 سے گل ظفر خان جبکہ پی کے 22 سے گل داد خان کو ٹکٹ جاری کیا تھا۔ مقتول نے سوشل میڈیا پر ٹکٹ تقسیم کے معاملے پر سوال کھڑے کیے تھے۔

مقتول نے خیبر پختونخوا حکومت کی کرپشن کا بھی 12 جنوری کو اپنے آخری ٹویٹ میں انکشاف کیا تھا۔ ریحان زیب کو چند روز سے پی ٹی آئی سے منسلک اکاؤنٹس سوشل میڈیا پر تنقید کا نشانہ بنا رہے تھے۔ قتل کے وقت مقتول امیدوار گل ظفر خان کے آبائی علاقے سے واپس آ رہے تھے۔

پی ٹی آئی آفیشل ٹویٹر اکاؤنٹ سے بھی ریحان زیب کے ٹکٹ کے معاملے پر غلط بیانی کی گئی جبکہ ٹویٹ کو بعد میں بدل دیا گیا تھا۔ ریحان زیب بطور آزاد امیدوار پی ٹی آئی کے آفیشل ٹکٹ ہولڈرز کے خلاف الیکشن لڑ رہے تھے۔

پولیس نے بتایا تھا کہ مقتول قومی اسمبلی کے حلقہ این اے 8 سے الیکشن میں حصہ لے رہے تھے، نامعلوم افراد نے صدیق آباد میں ان پر فائرنگ کی جس سے وہ جاں بحق ہوئے۔

بعدازاں، پی ٹی آئی کی جانب سے ریحان زیب کے قتل کی مذمت کی گئی تھی۔ ترجمان نے اپنے بیان میں کہا تھا کہ دہشتگرد کارروائیاں انتخابات کی ساکھ اور شفافیت پر بڑا سوالیہ نشان ہیں، سبی میں ریلی پر حملہ اور باجوڑ میں امیدوار کے قتل کی ذمہ دار نگراں حکومتیں ہیں۔

دوسری جانب، امیدوار کے قتل کا واقعہ پیش آنے کے باعث این اے 8 اور پی کے 22 پر الیکشن ملتوی کر دیا گیا ہے۔

Comments




Source link

Facebook Comments

رائے دیں

Back to top button