fbpx
خبریں

الیکشن ڈے پر سندھ کے 10 اضلاع میں تصادم کا خدشہ ہے، رپورٹ

کراچی: سندھ حکومت نے صوبے بھر کے 19 ہزار 236 میں سے 12 ہزار 460 پولنگ اسٹیشن حساس اور انتہائی حساس قرار دے دیے۔

تفصیلات کے مطابق سندھ حکومت نے بارہ ہزار سے زائد پولنگ اسٹیشنز کو حساس اور انتہائی حساس قرار دیتے ہوئے انتہائی حساس پولنگ اسٹیشنز پر فوج تعینات کرنے کی سفارش کر دی ہے۔

سندھ حکومت کی ایک رپورٹ کے مطابق الیکشن ڈے پر سندھ کے 10 اضلاع میں تصادم کا خدشہ ہے، سانگھڑ اور خیرپور میں جی ڈی اے اور پیپلز پارٹی میں تصادم، کراچی میں ایم کیو ایم، پی پی، پی ٹی آئی اور ٹی ایل پی میں تصادم کا خدشہ ہے۔

چمن : انتخابی دفتر پر مسلح افراد کی فائرنگ، اے این پی رہنما ظہور احمد جاں بحق

رپورٹ کے مطابق صوبے میں 2 ہزار فوجی جوان اور 4 ہزار رینجرز اہلکار سیکیورٹی فرائض سرانجام دیں گے، انتہائی حساس پولنگ اسٹیشنز پر بھاری تعداد میں پولیس تعینات ہوگی۔

کوئٹہ: پیپلزپارٹی کے انتخابی دفتر پر دستی بم حملہ، 3 افراد زخمی

رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ سندھ میں الیکشن ڈیوٹی کے لیے 22 کروڑ جاری کر دیے گئے، فورسز کے کھانے کے لیے الیکشن ڈیوٹی پر تعینات عملے کے لیے 21 کروڑ جاری کیے گئے۔

Comments




Source link

Facebook Comments

رائے دیں

Back to top button